Har Shakhs Khudi Ki Masti Mein Bas Apni Khatir Jeeta Hai


 
الفاظ کے جھوٹے بندھن میں
اغراض کے گہرے پردوں میں
ہر شخص محبّت کرتا ہے
حالانکہ محبّت کچھ بھی نہیں
سب جھوٹے رشتے ناطے ہیں
سب دل رکھنے کی باتیں ہیں
کب کون کسی کا ہوتا ہے
سب اصلی روپ چھپاتے ہیں
احساس سے خالی لوگ یہاں
لفظوں کے تیر چلاتے ہیں
ایک بار نظر میں آکے وہ
پھر ساری عمر رلاتے ہیں
یہ عشق و محبّت ، مہر و وفا
سب رسمی رسمی باتیں ہیں
ہر شخص خودی کی مستی میں
بس اپنی خاطر جیتا ہے……
Recommended:
Advertisements

About NimdA

nothing

Posted on September 9, 2014, in اردو شاعری. Bookmark the permalink. Leave a comment.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: