Woh Surah e Rom Parh K Musalmaan Hua – Ashfaq Ahmad


وہ سوره روم سن کر مسلمان ہوا ….. !!

میں آپ ور ہمارا ملک اس لئے پسماندہ ہے کہ ہم میں ڈسسپلن نہیں – ہم منظم نہیں –

یوری انڈریو نامی ایک انائونسر ٹورنٹو ریڈیو کی بہت خوبصورت آواز – وہ مسلمان ہوگیا –

جب میں کینیڈا میں تھا تو اس کا ایک انٹرویو سنا وہ کہتا ہے کہ وہ سوره روم سن کر مسلمان ہوا ہے –

جس میں یہ ہے کہ دنیا نے کہا ایران فتح ہوگیا اور ایران فتح بھی
ہوگیا تھا-

لیکن الله کہتا ہے یہ غلط ہے – رومی ہارے نہیں فتح یاب ہوئے اور تاریخ بتاتی ہے کہ چھہ دن کے بعد ہی پانسا پلٹ گیا اور رومی فتح یاب ہوئے –

یوری کی دل پر کچھ ایسی گزری کہ وہ یہ پڑھ کر مسلمان ہوگیا –

خیر ! میں یوری سے ملنے گیا اور اس سے پوچھا کہ تم اسلام کو کیسے دیکھتے ہو ؟

کہنے لگا ، ” the future of world is islm – it belongs to islam “

میں نے کہا کہ کیسی بات کرتے ہو ؟ اس کی کوئی بنیاد کوئی منطق نہیں ہے –

یوری نے کہا اسلام ایک اور طرح کا مذہب ہے – تم لوگ اس کو نہیں سمجھو گے – تم نے پتا نہیں کیوں یہ مذھب اختیار کر رکھا ہے –

وہ کہنے لگا ، جب امریکا کے دو ہزار گورے ، ایک ہزار کینیڈین ، چھہ سو سیکنڈے نیوین لوگ مسلمان ہو جائیں گے تو ہمارا قافلہ چل نکلے گا –

اور ہم لوگوں کو بتا دیں گے کہ اسلام کیا ہے –

میں نے کہا کہ ہماری تعداد تو ماشاءالله اکیلے ہی تقریباً بیس کروڑ ہے –

اس نے کہا نہیں sorry آپ غیر منظم ہیں – اور ایسے غیر منظم لوگ اتنا بڑا بوجھ نہیں اٹھا سکتے –

تم سے ہونا تو کچھ نہیں – ڈسسیپلین تم میں نہیں –

تم ناچ سکتے ہو –

یا رو سکتے ہو –

قتل کر سکتے ہو یا ہو سکتے ہو اور کچھ نہیں –

اشفاق احمد

Advertisements

About NimdA

nothing

Posted on September 20, 2014, in Ashfaq Ahmad, Urdu Islamic Stories, اردو نثر. Bookmark the permalink. Leave a comment.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: