Zindagi Mein Bohat se Mausam Aatay Hen


زندگی میں بہت سے موسم اور لوگ آتے جاتے رہتے ہیں ، کوئی خزاں کی طرح روکھا ، کوئی بہار کی طرح ترو تازہ ، کوئی گرمی کی طرح شدید ، کوئی سرما کی طرح سرد ، اور کوئی ساون کی طرح دوغلا ، ہم دوسروں کو ان کی تاثیر پر نہیں ، اپنی “ضرورت” کے معیار پر پرکھتے ہیں ، اسی لیے ضررت بدل جانے پر ، روئیے بھی بدل جاتے ہیں ، ہر وقت دیکھنے والی آنکھیں ، اچانک ماتھے پر پیوست ہو جاتی ہیں ، نظر میں التفات نہیں رہتا ، لفظوں میں مٹھاس کم پڑ جاتی ہے ، قدم بھاری بھاری ، ہاتھوں میں لغزش ، اور ؟؟؟ ایسے ہی بہت سے انسان ٹوٹ جاتے ہیں ، روز ٹوٹتے ہیں ، روز ہی بکھر جاتے ہیں ۔

مزید اقوال زریں کے لییئے یہاں کلک کریں

Advertisements

About NimdA

nothing

Posted on April 24, 2015, in اقتباس کولیکشن, اردو نثر. Bookmark the permalink. Leave a comment.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: